function gmod(n,m){ return ((n%m)+m)%m; } function kuwaiticalendar(adjust){ var today = new Date(); if(adjust) { adjustmili = 1000*60*60*24*adjust; todaymili = today.getTime()+adjustmili; today = new Date(todaymili); } day = today.getDate(); month = today.getMonth(); year = today.getFullYear(); m = month+1; y = year; if(m<3) { y -= 1; m += 12; } a = Math.floor(y/100.); b = 2-a+Math.floor(a/4.); if(y<1583) b = 0; if(y==1582) { if(m>10) b = -10; if(m==10) { b = 0; if(day>4) b = -10; } } jd = Math.floor(365.25*(y+4716))+Math.floor(30.6001*(m+1))+day+b-1524; b = 0; if(jd>2299160){ a = Math.floor((jd-1867216.25)/36524.25); b = 1+a-Math.floor(a/4.); } bb = jd+b+1524; cc = Math.floor((bb-122.1)/365.25); dd = Math.floor(365.25*cc); ee = Math.floor((bb-dd)/30.6001); day =(bb-dd)-Math.floor(30.6001*ee); month = ee-1; if(ee>13) { cc += 1; month = ee-13; } year = cc-4716; if(adjust) { wd = gmod(jd+1-adjust,7)+1; } else { wd = gmod(jd+1,7)+1; } iyear = 10631./30.; epochastro = 1948084; epochcivil = 1948085; shift1 = 8.01/60.; z = jd-epochastro; cyc = Math.floor(z/10631.); z = z-10631*cyc; j = Math.floor((z-shift1)/iyear); iy = 30*cyc+j; z = z-Math.floor(j*iyear+shift1); im = Math.floor((z+28.5001)/29.5); if(im==13) im = 12; id = z-Math.floor(29.5001*im-29); var myRes = new Array(8); myRes[0] = day; //calculated day (CE) myRes[1] = month-1; //calculated month (CE) myRes[2] = year; //calculated year (CE) myRes[3] = jd-1; //julian day number myRes[4] = wd-1; //weekday number myRes[5] = id; //islamic date myRes[6] = im-1; //islamic month myRes[7] = iy; //islamic year return myRes; } function writeIslamicDate(adjustment) { var wdNames = new Array("Ahad","Ithnin","Thulatha","Arbaa","Khams","Jumuah","Sabt"); var iMonthNames = new Array("????","???","???? ?????","???? ??????","????? ?????","????? ??????","???","?????","?????","????","???????","???????", "Ramadan","Shawwal","Dhul Qa'ada","Dhul Hijja"); var iDate = kuwaiticalendar(adjustment); var outputIslamicDate = wdNames[iDate[4]] + ", " + iDate[5] + " " + iMonthNames[iDate[6]] + " " + iDate[7] + " AH"; return outputIslamicDate; }
????? ????

جنگلی مینڈھے کا شکار

صبا شقیق | Stories in Urdu

مجھے برسوں سے یہ خواہش تھی کہ پہاڑوں پر رہنے والے شاندار گول گول سینگوں والے مینڈھے کا شکار کروں۔ مگر یہ اتنا آسان نہیں ہے۔ اس کے لیے ماہر شکاری ہونے کے ساتھ ساتھ پہاڑوں پر چڑھنے کا تجربہ ہونا بھی ضروری ہوتا ہے اور یہ تجربہ حاصل کرنے میں مجھے کافی عرصہ لگا۔ کینیڈا کے شمال میں یوکن نامی خوبصورت وادی ان پہاڑی مینڈھوں کا قدیم مسکن ہے۔

سو میں نے اور میرے دوست مائیکل نے اسی کا انتخاب کیا۔ ہم جہاز کے ذریعے برفانی چوٹیوں سے گھری اس وادی میں پہنچے۔ ہمارا گائیڈ ڈین تھا جو کہ کئی سال پہلے اس وادی کی سیر کو آیا اور پھر اس کی خوبصورتی میں اس قدر کھو گیا کہ یہیں کا ہو کر رہ گیا۔ اب وہ یہاں آنے والے سیاحوں اور شکاریوں کی رہنمائی کرتا تھا اور انھیں وادی کی خوبصورت جگہیں دکھانے کے ساتھ ساتھ شکارکے بہترین مقامات تک بھی لے کر جاتا تھا۔

ہم نے وادی کے اندر تک پہنچنے کے لیے کرائے پر جیپ حاصل کی اور تمام ضروری سامان جس میں خیمے، پانی، ٹن خوراک، پنیر، مونگ پھلی، بسکٹ، مچھلی، سوپ کے ٹِن وغیرہ شامل تھے جیپ پر لادے۔ اپنے کیمرے ہم نے اپنے رُک بیک میں رکھے۔ سامان پر ترپال کسی گئی اور وادی کے دامن تک ہمارے سفر کا آغاز ہوا۔ ہم نے پہلا کیمپ کساوا جھیل کے کنارے لگایا۔ یہاں نظارہ بے حد دلفریب تھا۔ جھیل کے سبزی مائل شفاف پانی میں نظر آتی برف پوش پہاڑوں کی چوٹیاں عجیب منظر پیش کررہی تھیں۔ ہم شکار بھول کر قدرت کی رنگینی میں کھو گئے۔

یوں جیسے ہم طلسم ہو شربا میں ہوں۔ جھیل تک ہم سہ پہر کو پہنچ گئے تھے۔ مگر اب شام ہو چکی تھی، ڈین نے کہا ’’اس وقت پہاڑوں پر چڑھنا مشکل اور جان لیوا ہو سکتا ہے، سو آرام کرتے ہیںاور صبح تازہ دم ہو کر مینڈھوں کو ڈھونڈنے نکلیں گے۔ کیونکہ اکثر یہ مینڈھے ایسی جگہ پر نظر آتے ہیں جہاں انسان کی رسائی ممکن نہیں ہوتی۔ سو پہاڑوں میں دور تک چلنا پڑتا ہے۔ اس لیے جوانو! آرام کرو اور صبح کے ایڈونچر کے لیے تیار اور تازہ دم ہوجائو۔‘‘

shikarriat, june 2013, jungle maindak ka shikar, urdu stories,