function gmod(n,m){ return ((n%m)+m)%m; } function kuwaiticalendar(adjust){ var today = new Date(); if(adjust) { adjustmili = 1000*60*60*24*adjust; todaymili = today.getTime()+adjustmili; today = new Date(todaymili); } day = today.getDate(); month = today.getMonth(); year = today.getFullYear(); m = month+1; y = year; if(m<3) { y -= 1; m += 12; } a = Math.floor(y/100.); b = 2-a+Math.floor(a/4.); if(y<1583) b = 0; if(y==1582) { if(m>10) b = -10; if(m==10) { b = 0; if(day>4) b = -10; } } jd = Math.floor(365.25*(y+4716))+Math.floor(30.6001*(m+1))+day+b-1524; b = 0; if(jd>2299160){ a = Math.floor((jd-1867216.25)/36524.25); b = 1+a-Math.floor(a/4.); } bb = jd+b+1524; cc = Math.floor((bb-122.1)/365.25); dd = Math.floor(365.25*cc); ee = Math.floor((bb-dd)/30.6001); day =(bb-dd)-Math.floor(30.6001*ee); month = ee-1; if(ee>13) { cc += 1; month = ee-13; } year = cc-4716; if(adjust) { wd = gmod(jd+1-adjust,7)+1; } else { wd = gmod(jd+1,7)+1; } iyear = 10631./30.; epochastro = 1948084; epochcivil = 1948085; shift1 = 8.01/60.; z = jd-epochastro; cyc = Math.floor(z/10631.); z = z-10631*cyc; j = Math.floor((z-shift1)/iyear); iy = 30*cyc+j; z = z-Math.floor(j*iyear+shift1); im = Math.floor((z+28.5001)/29.5); if(im==13) im = 12; id = z-Math.floor(29.5001*im-29); var myRes = new Array(8); myRes[0] = day; //calculated day (CE) myRes[1] = month-1; //calculated month (CE) myRes[2] = year; //calculated year (CE) myRes[3] = jd-1; //julian day number myRes[4] = wd-1; //weekday number myRes[5] = id; //islamic date myRes[6] = im-1; //islamic month myRes[7] = iy; //islamic year return myRes; } function writeIslamicDate(adjustment) { var wdNames = new Array("Ahad","Ithnin","Thulatha","Arbaa","Khams","Jumuah","Sabt"); var iMonthNames = new Array("????","???","???? ?????","???? ??????","????? ?????","????? ??????","???","?????","?????","????","???????","???????", "Ramadan","Shawwal","Dhul Qa'ada","Dhul Hijja"); var iDate = kuwaiticalendar(adjustment); var outputIslamicDate = wdNames[iDate[4]] + ", " + iDate[5] + " " + iMonthNames[iDate[6]] + " " + iDate[7] + " AH"; return outputIslamicDate; }
????? ????

دوا کو عادت مت بنایئے

نو شین ناز | طب و صحت

دوا کو عادت مت بنایئے: کچھ عرصہ پہلے میرے پاس ایک بہت رکھ رکھائو والی خاتون آئیں، پلان لکھوایا اور چلی گئیں۔ ٹھیک ڈیڑھ دو ماہ بعد ایک خاتون اور تشریف لائیں۔ کھلے پائنچوںوالا پاجامہ لانگ شرٹ بڑے سے گلاسز بہت سی Branded چیزیں پہن کر وہ میرے سامنے کھڑی تھی۔
جب تک وہ بولی نہ تھی مجھے کوئی حیرت نہ تھی لیکن جیسے ہی وہ بولیں تو میں نے حیرت سے اُسے دیکھا۔ ’’دیکھیں میڈم جی میرے کھاڑنے پینے دے پلان وِچ پینا وی رکھو اور گریب فولٹر دا جوس وی رکھو۔ ‘‘
میں سوچ رہی تھی کہ یہ سب کیا ہے؟
جی یہ ایک بہت انوکھی چیز تھی کہ لمبی سی گاڑی سے اُترنے والی یہ خاتون جس نے Branded لباس پہن رکھاتھا دراصل پہلے آنے والی خاتون کی housekeeper تھی۔
’’میں جی ڈیفنس چو آئی آں مسز زبیر دی جی میں ملازمت کر دی آں۔
اوہ! اچھا! میں اب بہت دلچسپی سے اُسے دیکھ رہی تھی۔ میںبے حیران تھی کہ کیااِس طبقے کو بھی Dietrition کی لگژری افورڈ ہوجاتی ہے؟ آپ کو میرا کِس نے بتایا؟ میں نے اس سے پوچھا۔
وہ جی جس دِن مسز زبیر لے کر گئیں تھیں کھاڑنے پینے دا نسخہ اُس دِن میں بھی اُنہاں دے نال سی۔ میں جی بلقیس ہوں جی۔ بی بی ما۔ تو جی اس نسخے نال ٹھیک ہوگئے سن پھر وہ بڑ بڑائی۔
صاحب لوگ تے پورے مہینے دا دس دیندے آں کہ کی کی پکنا اے۔ اور کھان نوں گھر تے آندے نئیں۔ (صاحب لوگ پورے مہینے کا بتا دیتے ہیں کہ کیا کیا پکنا ہے پھر پکوا کر گھر بھی اکثر نہیں آتے)
فیر جی پکاّ ہویا ساڈھے ہی کام دا اِے ناں۔ اوں جی مفت دا کھا کھا میں تے سنڈھی ہوئی پئی آں۔ (میں مفت کا کھا کھا کر موٹی ہوئی پڑی ہوں۔)
ناں میرا ویاہ ہوندا پیا ہے۔ (نہ میری شادی ہو رہی ہے) ہون ایک جگہ گل تے بنی اے پر او کہندا اے کہ تو اپنا وزن کم کر تے کُڑ ی کُڑی لگ۔‘‘
(اب ایک جگہ بات تو بنی ہے لیکن وہ کہتا ہے کہ تم اپنا وزن کم کر کے لڑکی لڑکی لگو۔ )
مفت دا کھا کھا کے بہت موٹی ہوگئی آں ہُن تُسی ڈائٹ دسوّ جیڑی تُسی بیگم صاحب نوں وی دسی سی۔ (مفت کا کھا کھا بہت موٹی ہوگئی ہوں اور آپ ڈائٹ بتائیں جو آپ نے بیگم صاحبہ کو بتائی تھی۔)
وہ تو بڑے سمارٹ شمارٹ ہوندے جاندے آں۔
(وہ تو بہت سمارٹ ہو رہی ہیں۔)
پر ساری چیزاں بیگم صاحبہ والیاں دسو تاکہ میں اُنہاں دی چھڈی ہوئی چیزاں نال کم چلاواں (لیکن ساری چیزیں بیگم صاحبہ والی بتائیںتا کہ ان کی چھوڑی ہوئی چیزوں سے کام چلائوں)
ایک اور فرمائش محترمہ کی طرف سے آئی تھی۔
تو تم یہ سب گھر میں ہی کر لیتی مجھے کیوں پوچھنے اور فیس دینے اتنی دور آئی؟
میں نے بمشکل اپنی مسکراہٹ دبائی تھی۔
میڈم جی ہوسکدا اے کہ او چکھ کھا پی کہ اُلٹا نقصان ہو جاندا؟ تے میں سوچیا کہ جا کر پُچھ لیندی آں۔ نالے میں اپنے منگیتر نوں وی دساں گی کہ میں خراک والی ڈاکٹرنی کول گئی سی۔ (میڈم جی ہو سکتا ہے وہ چیزیں کھا بی کر الٹا نقصان ہو جاتا۔ میں نے سوچا خود ہی جا کر پوچھ لیتی ہوں اور اپنے منگیتر کو بھی بتاؤں گی کہ میںخوراک پلان بتانے والی ڈاکٹرنی کے پاس گئی تھی)۔
(میڈم جی ہو سکتا ہے وہ چیزیں کھا پی کر اُلٹا نقصان ہو جاتا۔ میںنے سوچا خود ہی جا کر پوچھ لیتی ہوں اور اپنے منگیتر کو بھی بتائوں گی کہ میں خوراک پلان بتانے والی ڈاکٹرنی کے پاس گئی تھی۔)
وہ رج کر مسکرائی تھی۔
سبحان اللہ!! میں نے با آواز بلند مسکرا کر کہا تھا۔
’’تو اب آپ فرمائیں میں آپ کے لیے کیا کروں کیونکہ آپ تو پلان پر صرف میری ہاں کروانے آئی ہیں۔ ‘‘میں نے بہت تحمل سے کہا تھا۔
تُسی دسو کہ اے ٹھیک اے نسخہ مسز زبیر والا میرے لئی؟ اُس نے مسز زبیر کا پلان نکال کر میرے سامنے کر دیا۔
کمال ہے وہ اپنی بیگم صاحبہ کا پلان بڑے آرام سے اُٹھا لائی تھی۔
دیکھیں وہ شوگر کی مریضہ ہیں۔ تم اُن کا پلان نہ استعمال کرنا۔
میں نے فوراً منع کیا تھا۔
دیکھو نااُن کا فزیکل ایکٹوٹی لیول مختلف ہے اُن کی اندرونی صحت مختلف ہے۔ تم اگر اُن کا پلان فالو کرو گی تو اُلٹا نقصان ہوجائے گا۔
لے میں تے پہلے ای کیندی سی( لو یہ تو میں پہلے ہی کہہ رہی تھی۔)
او جی تُسی فیر بدل دیو پر زیادہ چیزاں او رکھنا جیڑی مسز زبیر لیندے آں( پر آپ زیادہ تر وہ چیزیں رکھیں جو مسز زبیر استعمال کرتی ہیں۔)
ٹھیک ہے!! میں نے پھر تحمل سے اسے دیکھا۔
وہ پلان لے کر پوری فیس دے کر جا چکی تھی اور میں سوچ رہی تھی کہ آگہی کہاں تک چلی گئی ہے۔ ایک گھریلوملازم طبقے کی خاتون کوبھی اندازہ ہوگیا ہے کہ کوئی غذائی ڈاکٹر بھی ہوتی ہے جس کے کہنے پر صرف غذا بدل لینے سے جسم اور وزن کو فرق پڑ سکتا ہے۔
پرانے دور میں دوائیاں کہاں ہوتی تھیں۔ پیٹ درد ہوا توسونف، الائچی اور پودینے کا قہوہ پی لیا گیا۔
بچہ بے چین ہے تو پیٹ کی مالش کر دی۔ موشن لگے ہیں تو صرف نرم غذا دے دی گئی! دوائی اور ڈاکٹر نہ تھے۔ اور مرض بھی کم تھے۔ اب دوائیاں بھی زیادہ ہیں، ڈاکٹر بھی اور مرض تو بہت ہی زیادہ ہیں۔ ایسے میں پرہیز اور پھر متوازن غذا کا استعمال ہی بہتر اور آسان ہے۔ جب محسوس ہو کہ مسئلہ زیادہ ہے تو دوائی لیں۔ کم مسئلے کے ساتھ دوائی کی ضرورت نہیں ہے اور دوائی کو عادت توبالکل نہیں بنانا چاہیے یہ سخت نقصان دہ ہے۔ جسم کا پورا نظام تہ و بالا ہونے لگتا ہے۔ سائیڈ ایفیکٹس الگ ہیں۔ گائنی کی دوا تو سو بار سوچ کر لینی چاہیے۔ سالہاسال لگ جاتے ہیں اس دوا کے اثرات سے نکلنے میں۔ اب چلتے ہیں آپ کے سوالات کی جانب۔
سوال: میں ایک پریشان ماں ہوں۔ اپنی بچی کے Prolactin لیول بڑھ جانے سے۔ فوڈ پلان چاہیے تاکہ مسئلہ حل ہو۔ مسز عمران الٰہی۔کراچی
جواب: Prolactin ایک ایسا ہارمون ہوتا ہے جو Synthesized ہوتا ہے Pituitary gland میں۔ اور اس کے بہت سے اہم کام ہیں جو یہ ادا کرتا ہے۔ یہ بریسٹ کی Developmentکو Stimulateکرتا ہے۔ چھاتیوں سے دودھ کی secretion اور Ovulationسے بھی تعلق رکھتا ہے۔
جن کھانوں میں امائنو (amino)ایسڈز ہوتے ہیں وہ Dopamine synthesisکو encourageکرتے ہیں۔ اس طرح کسی حد تک یہ کھانے آپ کے Prolectin لیول کو کم کرنے میں مدد دے سکتے ہیں۔
ایسے کھانے Phenylalaningزیادہ رکھتے ہیں۔ وہ بہت اہم ہیں۔ جیسے فیٹس، انڈے، ڈیری، سویا کی چیزیں جیسے کہ سویا بین کا آٹا، Tofuاور Nuts وغیرہ۔ خاص طور پر بادام، مونگ پھلی اور اخروٹ۔
دس باداموں میں تقریباً ایک گرام Phenylalanine ہوتا ہے اور ایک ایوریج آدمی کو اس کی اتنی ہی مقدار تجویز کی جاتی ہے۔
اِسی طرح جو کھانے Tyrosineاپنے اندر رکھیں وہ بہترین ہیںاور ہول ویٹ، Lima beans, oats ،تِل اورکدّو کے بیجوں میں یہ وافر مقدار میں پایا جاتا ہے۔
اِسی طرح Yeastبھی Tyrosineاور Phenylalanineکا بہترین ذریعہ ہے۔
Pituitary ٹِیومر کی نشانیوں میں نظر کا جاتے رہنا (Vision loss) ہوتی ہے۔ ہاتھوں اور پیروں کا بڑا ہونا، وزن کا گِرنا وغیرہ شامل ہیں۔
ہر مرض سے لڑنا ہی پہلی اور آخری کامیابی ہے۔ جیسے جیسے یہ لیول بڑھتا ہے سر درد، اُلٹیاں اور پیریڈز کے نہ ہونے کی عام شکایات ہیں۔ Combination میڈیسن اور پرہیز اس کا بہترین علاج ہے۔
ناشتے سے پہلے گریپ فروٹ جوس+واٹر یا پھر ایک پیالہ اسٹابریز کا۔
ناشتا: ایک کینو،انڈا+سویا ملک+تین بادام ۔
دس بجے: تین اخروٹ ، 12بجے، لیمن گراس کا قہوہ : 1بجے: کالے، سفید چنے یا پھر لوبیا بوائل سلاد مِکس کرکے بغیر نمک کے استعمال کریں۔ آپ دہی استعمال کر سکتی ہیں۔
2بجے:لیمن گراس قہوہ ، 3.30 بجے: دودھ+تین بادام ، 4.30بجے:بیریز یا پھر اسٹابریز کا پیالہ (درمیانہ سائز کا)
6.30 بجے: دودھ+دو اخروٹ یا ایک آلو کا دانہ
8.30 بجے شام: فِش/مٹن/بیف پام سائز+سلاد+ فور گرین آٹے کی روٹی+لیمن گراس قہوہ۔
جب درمیان میں بھوک لگے توآپ 1/4سپون Pumpkinکے بیج یا پھر ایک انڈا یا پھر مزید پام سائز فِش لے سکتی ہیں۔لیکن یہ صرف شدید ضرورت میں ہو۔
زیادہ پانی کا استعمال کریں۔ دوران نماز طویل سجدہ ادا کریں۔ اللہ تعالیٰ آپ کو شِفائے کاملہ،عاجلہ عطافرمائے۔
سوال: میرا مسئلہ یہ ہے کہ میں کھانا کھاتے ہی واش روم بھاگتی ہوں اور بار بار کھانا کھاتی ہوں۔ بہت بھوک اور کمزوری کا احساس رہتا ہے ۔ اور وزن بہت بڑھ گیا ہے۔ میں غیر شادی شُدہ ہوں، عمر23سال وزن 95 کلو اور ایکٹوٹی لیول بہت کم ہے۔ گھرمیں ہر کام کے لیے ملازم ہیں۔ میں اکلوتی ہوں اس لیے بھی کبھی کوئی خاص کام نہیں کیا۔ پلیز باجی میری مدد کریں۔
میں حکیم کی دوائی بارہا کھا چکی ہوں اُس سے مجھے قبض ہوجاتی ہے۔
میں واقعی بہت تکلیف میں ہوں۔ میری مدد کریں۔ پلیز پلیز…! (عائشہ رضوان چکوال)
جواب: عائشہ ایک گھنٹا صبح اور ایک گھنٹا شام واک کریں۔
ناشتے سے پہلے۔ سفیدبدانہ انار ایک پیالی۔ 8بجے: دوچمچ اسپغولLowfat+ دہی+ ایک برائون سلائس۔
دس بجے:بدانہ انار ایک عدد ، گیارہ بجے: لیمن گراس قہوہ ۔12بجے: دو ٹیبل سپون اسپغول کا چِھلکا+ایک کیلا۔
2بجے: ایک گلاس نیم گرم پانی ،کدو کا رائتہ بِنا مرچ کے یا پھر Lowfatدہی + ایک برائون سلائس ۔
4بجے: دودھ اِسکم+تین بادام،6بجے: انار/سیب/ایک کیلا۔ 8.30: ایک پیالی جو کا دلیہ+آدھا سیب۔
سونے سے پہلے دو سپون اسپغول کا چِھلکا ضرور لیں۔ یہ پلان کم از کم دو ماہ استعمال کریں۔ ساتھ ہی وٹامن ای کی گولیاں استعمال کریں۔ نیم گرم پانی کا استعمال جاری رکھیں۔ نماز میں باقاعدگی رکھیں۔
سوال:میری عمر21سال ہے وزن 55کلو ہے قد چھے فِٹ ہے اور میرے بال تیزی سے گِر رہے ہیں۔ قمر احمد، کراچی
جواب: آپ نماز کی باقاعدگی، طویل سجدہ پر توجہ اور زیادہ پانی پئیں۔
8بجے: ناشتہ۔ دو کیلے+ایک گلاس دودھ ۔10بجے: دو کھجور+ایک گلاس دودھ۔ 12بجے: چقندر+مولی کا سلاد+ایک پیالی+دال +روٹی+ادرک کا قہوہ۔ 2بجے:دودھ+پانچ بادام۔4بجے: تین پھلوں کی چاٹ بِنا چینی کے سیرپ کے۔ 6بجے: سیب کا جوس ۔8.30بجے: آپ گھر کا سالن+روٹی+مولی چقندر کا سالن +آدھی پیالی دہی+ادرک کا قہوہ لیں۔سونے سے پہلے ایک ٹیبل سپون اسپغول کا چھلکا ضرور لیں۔
600mgوٹامن ای دِن میں دو دفعہ چھے ماہ تک لیں۔ ساتھ ایک ملٹی وٹامن بھی ضرورشامل کریں۔ نماز میں سجدہ طویل کریں۔
اِس ماہ کی خوشخبری میں منتہیٰ کراچی، عروہ گجرات، سکینہ بی بی فیصل آباد کو اللہ تعالیٰ نے اولاد جیسی نعمت کی خوشخبری دی ہے۔
یاد رکھیں بچے کے بعد بھی آپ کو بہت احتیاط سے غذا کا استعمال کرنا ہوگا۔
خرم علی آزاد کشمیر126کلو سے 119پر آگئے ہیں۔
ایاز بٹ 103سے 95کلو پر آگئے ہیں۔ رضوان مجید 96سے 83پر آگئے ہیں۔
جویرہ 106سے 95پر آگئی ہیں۔ سدرہ جواد 80سے 71پر آگئی ہیں۔ آپ سب کو اللہ اپنی حفاظت میں رکھے۔ شکر گزاری کے لیے بھی لازم ہے کہ نماز کی باقاعدگی کم نہ ہو۔ واک کا ناغہ نہیں کرنا اور ہاں اچھا سوچنے، متوازی غذا کے استعمال اور پانی کے زیادہ استعمال کو معمول کا حصہ بنایے۔
اندرون و بیرون ملک انٹرنیٹ کے ذریعے رابطے کے لیے کئی سوال اور SMSآئے ہیں۔ گزارش یہ ہے کہ صبح ساڑھے سات سے ساڑھے نو تک میں سبزہ زار کلینک کرتی ہوں پھر مصطفیٰ ٹائون چلی جاتی ہوں۔ شام کو 4سے چھے بجے تک دوبارہ کلینک پر مریضوں کو دیکھتی اور پلان دیتی ہوں۔ پھر گھر بچوں اور میاں کو دیکھنا ہوتا ہے۔ ایسے میں انٹرنیٹ کے لیے وقت نہیں نکال پاتی۔ یونہی ممکن ہوا کالم میں ہی بتا دوں گی۔ اجازت سے پہلے اپنی آرزو دہرائوں گی کہ مجھے اور میرے اہل خانہ کو اپنی دعائوں میں یاد رکھیے گا۔